Shab-e-Barat Nawafil Namaz and Roza

Shab-e-Barat Nawafil Ibadat:

Shab-e-Barat Nawafil عبادات میں شب برات کا روزہ رکھنا، نوافل نمازیں پڑھنا اور بہت سی نوافل عبادات ہے یہاں آپ کو نوافل نماز اور روزے کا بیان کیا جا رہا ہے جو کہ میں نے ایک بہت ہی پیاری کتاب “آقاﷺ کا مہینا” سے لیا ہے آپ اچھی اچھی نیتوں کے ساتھ یہ کتاب ایک دفعہ شب برات سے پہلے ضرور پڑھے۔ اس کتاب کا لنک اس پوسٹ کے آخر میں دیا گیا ہے۔

Shab-e-Barat Images 2018

Shab-e-Barat Nawafil Roza

حضرتِ سَیِّدُنا علیُّ المُرتَضٰی شیر خداکَرَّمَ اللہُ تَعَالٰی وَجْہَہُ الْکَرِیْم سے مروی ہے کہ نبیِّ کریم، رء وْفٌ رَّحیم عَلَيْهِ اَفْضَلُ الصَّلَاةِ وَالتَّسْلِيْم کا فرمانِ عظیم ہے: جب پندَرَہ شعبان کی رات آئے تو اس میں قیام (یعنی عبادت)کرو اور دن میں روزہ رکھو۔بے شک اللہ تَعَالٰی  غروب آفتاب سے آسمانِ دنیا پر خاص تجلی فرماتا اور کہتا ہے:’’ہے کوئی مجھ سے مغفرت طلب کرنے والا کہ اُسے بخش دوں !ہے کوئی روزی طلب کرنے والا کہ اُسے روزی دوں !ہے کوئی مصیبت زدہ کہ اُسے عافیت عطا کروں !ہے کوئی ایسا! ہے کوئی ایسا! اور یہ اُس وَقت تک فرماتا ہے کہ فجرطلوع ہو جائے ۔ ‘ ‘

(سُنَنِ اِبن ماجہ ج۲ص۱۶۰حدیث ۱۳۸۸)

Shab-e-Barat Dua

Shab-e-Barat Nawafil Namaz

 معمولاتِ اولیا ئے کرام رَحِمَہُمُ اللہُ السَّلَام  سے ہے کہ مغرب کے فرض وسنَّت وغیرہ کے بعدچھ رَکعت نفل(نَفْ۔لْ) دو دو رَکعت کر کے ادا کئے جائیں ۔پہلی دو رَکعتوں سے پہلے یہ نیت کیجئے:’’ یَااللہ عَزَّ وَجَلَّان دورَکعتوں کی بر کت سے مجھے درازیِ عمر بالخیر عطا فرما ۔ ‘‘ دوسری دو رَکعتوں میں یہ نیت فرمایئے:’’یَااللہ عَزَّ وَجَلَّ ان دو رکعتوں کی بَرکت سے بلاؤں سے میری حفاظت فرما۔‘‘ تیسری دو رَکعتوں کیلئے یہ نیت کیجئے:’’ یَااللہ عَزَّ وَجَلَّ ان دو رَکعتوں کی بر کت سے مجھے اپنے سوا کسی کا محتاج نہ کر۔‘‘ان 6رَکعتوں میں سُوْرَۃُ  الْفَاتِحَہ کے بعد جو چاہیں وہ سورَتیں پڑھ سکتے ہیں ،چاہیں تو ہر رَکعت (رَکْ ۔عَت) میں سُوْرَۃُ  الْفَاتِحَہ کے بعد تین تین بارسُوْرَۃُ  الْاِخْلَاص  پڑھ لیجئے۔ ہر دو رَکعت کے بعداِکیس بار قُلْ هُوَ اللّٰهُ اَحَدٌ (پوری سورت)یا ایک بارسُوْرَۂ یٰسٓ شریف پڑھئے بلکہ ہو سکے تو دونوں ہی پڑھ لیجئے۔ یہ بھی ہو سکتا ہے کہ کوئی ایک اسلامی بھائی بلند آواز سے یٰسٓشریف پڑھیں اور دوسرے خاموشی سے خوب کان لگا کر سنیں ۔ اس میں یہ خیال رہے کہ سننے والا اِس دَوران زَبان سے یٰسٓشریف بلکہ کچھ بھی نہ پڑھے اور یہ مسئلہ خوب یاد رکھئے کہ جب قراٰنِ کریم بلند آواز سے پڑھا جائے تو جو لوگ سننے کیلئے حاضر ہیں اُن پر فرضِ عین ہے کہ چپ چاپ خوب کان لگا کر سُنیں ۔اِنْ شَآءَاللہ عَزَّ وَجَلَّرات شروع ہوتے ہی ثواب کا اَنبار(اَمْ۔بار)لگ جائے گا۔ ہر بار یٰسٓشریف کے بعد’’ دُعائے نصف شعبان‘‘بھی پڑھئے۔

“آقاﷺ کا مہینا” Click here and read more about Shab-e-Barat Nawafil Ibadat…

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

Pin It on Pinterest